Overseas Pakistani appeals for help

لاک ڈاؤن کے دوران سعودی عرب میں پھنسے ایک پاکستانی نے زاروقطار روتے ہوئے ہاتھ جوڑ کر حکومت سے اپیل کی ہے کہ ہم خود کشی کرنے کا سوچ رہے ہیں خدارا کرایوں میں کمی کرکے ہمیں واپس اپنے ملک لانے کیلئے انتظامات کیے جائیں۔

Video: Overseas Pakistani asks for help

پاکستانی شہری نے روتے ہوئے کہا کہ تین ماہ سے ہمارے کام بند ہیں ، ہم نے گھروں کے کرایے نہیں دیے جس کی وجہ سے ہم سے گھر خالی کروائے جارہے ہیں، ہم پاکستان واپس نہیں آسکتے جو ٹکٹ پہلے 800 ریال کی تھی اب وہ 22سو ریال کی ہوچکی ہے ہمارے پاس کھانے کو پیسے نہیں ہیں یہ 22 سو ریال ٹکٹ کیلئے کہاں سے لائیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ سنا ہے پاکستا ن پہنچ کر لوگوں کو قرنطینہ سینٹرز میں رکھا جاتا ہے جس کے الگ سے پیسے وصول کیے جارہے ہیں، پاکستانی حکومت اور یہاں پاکستان سفارت خانہ ہم سے کسی طرح کا تعاون نہیں کررہے، ہم جانتے ہیں کہ خود کشی حرام ہے لیکن یہاں مقیم مجھ سمیت بہت سے پاکستانی خود کشی کا سوچ رہے ہیں۔

انہوں نے حکومت سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہم بیوی بچے والے ہیں اس مشکل کی گھڑی میں ہماری مدد کی جائے ہمیں مرنے سے بچایا جائے، ہم پردیس میں بہت مشکل میں ہیں، بہت پریشان ہیں ، ہمارے پاس کھانے تک کے پیسے نہیں ہیں اور نہ ہمیں کوئی ادھار دینے کیلئے تیار ہے۔

انہوں نے ہاتھ جوڑ کر کہا کہ میری سب سے اپیل ہے کہ اس پیغام کو حکومت پاکستان تک پہنچایا جائے ، حکومت سے درخواست ہے کہ ٹکٹ میں کمی کرکے ہمیں پاکستان واپس لایا جائے۔

1 COMMENT

Leave a Reply