India-China dispute and analysis of current situation

بھارت کا اپنے سب ہی ہمسائیوں کے خلاف سرحدی تنازعہ شدت اختیار کرتا جا رہا ہے۔ اس کے ساتھ کورونا وائرس کی تباہی جس نے دنیا کے بہت سے ممالک کو کھوکھلا کیا ہوا ہے، مودی کی پالیسیوں سے کمزور ہوتی بھارتی اکانومی مزید کھوکھلی ہو چکی ہے۔

بھارتی مالیاتی اداروں کی تازہ ترین جاری کی گئی رپورٹس کے مطابق بھارت کے 34 فیصد لوگوں کی حالت یہ ہے کہ اگر بھارتی حکومت ان کی مالی امداد نہیں کرتی تو ان کے پاس اگلا ایک ہفتہ گزارنے کی سکت بھی نہیں ہے۔

ان بدترین معاشی حالات کے ساتھ بھارت درج ذیل تنازعات میں گھرا ہوا ہے۔

  • چین کے ساتھ سرحدی تنازعہ جو شدت اختیار کرتا جا رہا ہے اور جس کی وجہ سے حال ہی میں درجنوں بھارتی فوجیوں کی ہلاکت ہوئی۔
  • نیپال کے ساتھ تنازعہ، نیپال نے پچھلے میہنے تازہ جغرافیائی نقشہ جاری کیا جس کے مطابق بہت سارے بھارتی علاقوں پہ نیپال نے ملکیت کادعوی کیا۔ اور اس کے بعد نیپال اور بھارت میں کشیدگی شدت اختیار کر گئی۔
  • پاکستان کے ساتھ پنگے بازیاں، جو کہ دہائیوں سے چل رہا ہے۔ اور مسئلہ کشمیر کے حل تک اسی شدت سے چلتے رہنا ہے۔
  • اب حال ہی میں بنگلہ دیش کی طرف سے جاری کیے گئے نئے نقشے جس میں انہوں نے بھارتی علاقوں کو اپنے علاقے قرار دیا ہے۔ اس کے بعد بھارت کے تعلقات بنگلہ دیش سے بھی بگڑ چکے ہیں۔
  • ناگا لینڈ، منی پور، حیدرآباد، خالصتان، مقبوضہ کشمیر، نیکسل باغی اور دوسری درجنوں علیحدگی کی تحریکیں۔
Broken future of India
Representative Image

بگڑتی معاشی حالت اور اتنے سارے تنازعات کے بعد امکانات واضح ہیں، کہ بھارت کا حال سوویت یونین جیسا ہونے والا ہے۔

سن 80ء کی دہائی میں سوویت یونین کے بھی موجودہ بھارت جیسے حالات تھے۔ ایسی ہی معاشی حالت، لیکن بھارت کی موجودہ حالت سے قدرے بہتر، اور ایسی ہی درجنوں علیحدگی کی تحریکیں۔ پھر سب نے دیکھا کہ صرف دس سال کے عرصے میں سوویت یونین کے کتنے ٹکڑے ہوئے۔

Video: Analysis by Raja Faisal over current situation of India

بھارت کے موجودہ حالات پہ راجا فیصل نے بہت زبردست تجزیہ کیا ہے۔ مکمل گفتگو اوپر دی گئی ویڈیو میں دیکھیں۔

Leave a Reply