Imran khan Shab Saray Samosay Free lay jain , imran khan without Protocol – 2 May 2021





pm imran khan,imran khan today speech,imran khan speech

46 COMMENTS

  1. ما شاء الله لا قوة إلا بالله
    اللہ ھمارے وزیراعظم کو صحت تندرستی سے سلامت رکھے اور دشمنوں کے شر سے محفوظ رکھے آمین یا رب العالمین ۔دل ٹھنڈا ھو گیا سن کر ۔یا اللہ تیرا شکر ہے کہ ایسا وزیراعظم ایسا بندہ عطا فرمایا ھمارے وطن کو ۔ ھم سعودیہ سے ھیں اور دل کی گہرائیوں سے دعایئں ھیں عمران خان صاحب کے لئے

  2. یا رب صدقے اپنے حبیبؐ کے ہم سب کو کرونا وبا سے محفوظ فرما۔ براے مدینہ مدینہ والے کے صدقے میرے چینل کو سبسکراب اور سپورٹ کریں.

  3. تسی بڑی خوشی نہ دسیہ کہ کام بہت اچھا جا رہے ہیں اب وہ اتنی ہی خوشی سے سموسے بیچنے والوں پر بھی ٹیکس لگا دیں گے آخر پاکستان کا قرضہ بھی اترنا ہے

  4. یہ سارا پہلے سے ایک پلان بنایا تھا ،ایجنسیوں نے سارا راستہ صاف کیا تھا ،لوگوں کو بےوقوف نہیں بناؤ

  5. ❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️💕❤️👌👌👌👌👌💕💕💕💕💕💕🇩🇪🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰🥰

  6. جند جان کپتان❤❤اللّٰہ پاک میرے کپتان کو صحت و تندرستی والی لمبی زندگی عطاکریں خان صاحب آپ ثابت قدم رہیں ہم آپکے ساتھ تھے آپکے ساتھ ہیں اور آخری سانس تک ساتھ رہیں گے۔ بس ان چوروں کو اب الٹا لٹکاکے انکی چھترول کرکے پیسے نکلوائیں ساتھ ہی ان چور ٹھگ اور بکاو ججوں کو بھی الٹا لٹکائیں

  7. جب وزیر اعظم نے گوشت مارکیٹ کا دورہ کیا انتہائی صاف و شفاف مارکیٹ میں چہل قدمی کرتے ہوئے وزیراعظم ایک قصائی کے پاس جاکر کھڑے ہوئے اور ان سے بات چیت کے بعد ان کے پاس موجود صاف و شفاف گوشت دیکھ کر تعریف کی اور پوچھا گوشت تو خوب بکتا ہوگا؟

    قصائی: گوشت تو واقعی اچھا ہے لیکن آج ابھی تک صبح سے ایک کلو بھی فروخت نہیں ہوا۔

    وزیراعظم: فروخت نہ ہونے کی کیا وجہ ہے؟

    قصائی: کیونکہ آپ کے آنے کے سبب خریداروں کو مارکیٹ آنے ہی نہیں دیا گیا۔

    وزیراعظم: اوہو پھر تو میں چار کلو خرید لوں گا۔

    قصائی: میں آپ کو گوشت نہیں دے سکتا۔

    وزیراعظم: کیوں؟

    قصائی: کیونکہ آپ کی حفاظت کے لئے ہم سے چھریاں لے لی گئی ہیں۔

    وزیراعظم: تو تم بغیر کاٹے بھی مجھے دے سکتے ہو۔

    قصائی: نہیں میں نہیں دے سکتا۔

    وزیراعظم: کیوں؟

    قصائی: کیونکہ میں سیکیورٹی ادارے کا آفیسر ہوں، قصائی نہیں۔

    وزیراعظم (غصے سے): جاؤ فوری طور پر اپنے سینئر آفیسر کو بلا کر لاؤ۔

    قصائی: سوری سر ایسا نہیں ہو سکتا۔

    وزیراعظم: کیوں؟

    قصائی: کیونکہ سامنے والی دوکان پر وہ مچھلی فروش بن کر کھڑے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔!
    وجیر آجم عمران نیازی کا اچانک دورہ اسلام آباد

  8. Acha acha ye wohi imran khan hai jisne etne Musalman roze ki halat me shaheed krway. Or angrezo se apni wafadar nibhane k liye Naamus e Risalat k msle ko side pr krdiya . ye to mulk ka hi nahi Islam ka bhi dushman hai phir ye hamara khairkwah kaise hosakta hai.

  9. وزیر اعظم نے مارکیٹ کا دورہ کیا انتہائی صاف و شفاف مارکیٹ میں چہل قدمی کرتے ہوئے وزیراعظم ایک قصائی کے پاس جاکر کھڑے ہوئے اور ان سے بات چیت کے بعد ان کے پاس موجود صاف و شفاف گوشت دیکھ کر تعریف کی اور پوچھا گوشت تو خوب بکتا ہوگا-
    قصائی:گوشت تو واقعی اچھا ہے لیکن آج ابھی تک صبح سے ایک کلو بھی فروخت نہیں ہوا-
    وزیراعظم:فروخت نہ ہونے کی کیا وجہ ہے؟
    قصائی:کیونکہ آپ کے آنے کے سبب خریداروں کو مارکیٹ آنے ہی نہیں دیا گیا –
    وزیراعظم:اوہو پھر تو میں چار کلو خرید لوں گا –
    قصائی:میں آپ کو گوشت نہیں دے سکتا –
    وزیراعظم:کیوں؟
    قصائی:کیونکہ آپ کی حفاظت کے لئے ہم سے چھریاں لے لی گئی ہیں
    وزیراعظم:تو تم بغیر کاٹے بھی مجھے دے سکتے ہو
    قصائی:نہیں میں نہیں دے سکتا –
    وزیراعظم:کیوں؟
    قصائی:کیونکہ میں سیکیورٹی ادارے کا آفیسر ہوں،قصائی نہیں-
    وزیراعظم (غصے سے):جاؤ فوری طور پر اپنے سینئر آفیسر کو بلا کر لاؤ
    قصائی:سوری سر ایسا نہیں ہو سکتا وزیراعظم:کیوں؟
    قصائی:کیونکہ سامنے والی دوکان پر وہ مچھلی فروش بن کر کھڑے ہیں۔۔۔۔۔۔۔

Leave a Reply