بھارت جو اقلیتوں اور خاص طور پر مسلمانوں کیلئے جہنم جیسا بنتا جا رہا ہے۔ آئے روز مسلمانوں کو انتہا پسند ہندوؤں حتی کہ پولیس کی جانب سے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ حال ہی میں عائشہ نامی بھارتی خاتون کی یہ ویڈیو وائرل ہو رہی ہے۔

عائشہ ایک ایسے گروپ کی ممبر ہے جو گلیوں میں پھرتے آوارہ کتوں کو پکڑ کر خوراک اور طبی امداد دیتے ہیں۔ عائشہ اور اس کے گروپ ممبران کو بھارتی پولیس کی جانب سے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

بھارت کا مکروہ چہرہ بےنقاب کرتے ہوئے عائشہ کا کہنا ہے کہ ان کے ملک میں ایسا ہر روز ہوتا ہے۔ بھارتی پولیس کا یہ رویہ عام ہو چکا ہے۔

Leave a Reply